ڈاکو ہونے سے بہتر ہے بندہ بیوروکریٹ ہوجائے

چائنہ کے ایک بینک میں ڈاکو گھس آئے ۔ چلا کر کہنے لگے “سارے نیچے لیٹ جاو ، پیسے تو حکومت کے ہیں جان تمہاری اپنی ہے” اور سب نیچے لیٹ گئے۔ ایک خاتون کے لیٹنے کا انداز ذرا میعوب تھا جس پر ایک ڈاکو نے چلا کر کہا “تمیز سے لیٹو ڈکٹتی ہورہی ہے عصمت دری نہیں “۔

ڈکیتی کے بعد جب ڈاکو واپس لوٹے تو چھوٹے والے ڈاکو نے جو کہ انتہائی پڑھا لکھا ہوا تھا بڑے ڈاکو سے جو کہ صرف چھ جماعتیں پاس تھا پوچھا” کتنا مال ہاتھ آٰیا؟” بڑے ڈاکو نے کہا “تم بڑے ہی بیوقوف ہو اتنی زیادہ رقم ہے ہم کیسے گن سکتےہیں ،ٹی وی کی خبروں سے خود ہی پتہ چل جائے گا کہ کتنی رقم ہے ”

ڈاکووں کے جانے کے بعد بینک مینجر ، بینک سپروائزر کو کہا کہ پولیس کو جلدی سے فون کرو !! سپروائزر بولا “انتظار کریں ،پہلے اپنے لیے 10 ملین ڈالر نکال لیں اور پھر جو پچھلا ہم نے 70 ملین ڈالر کا غبن مارا ہے اس کو بھی کل ڈکیتی شدہ رقم میں ڈال لیں” یہ اچھی بات ہے اگر بینک میں ہروز ڈکیتی ہو ۔

اگلے دن میڈیا پر خبر چلی کہ بینک میں 100 ملین ڈالر کی ڈکیتی ہوئی ہے ۔ اصل ڈاکووں نے رقم گننی شروع کی ،بار بار گنی لیکن وہ صرف 20 ملین ڈالر نکلی ۔ ڈاکو اپنا سر پیٹنے لگے کہ ہم نے اپنی جان موت کے خطرے میں ڈالی اور ہمارے ہاتھ صرف بیس ملین اور بینک مینجر صرف انگلی کے اشارے سے 80 ملین لے گیا !! ڈاکو ہونے سے تو بہتر تھا کہ ہم پڑھ لکھ جاتے !!

چائنہ کے لیے تو ایک لطیفہ ہے پاکستان کے لیے ایک حقیقت ۔ یہ ایک بڑا سا بینک ہے جس میں ہر پانچ سال بعد کچھ ڈاکو گھس آتے ہیں ، لوگوں کو نیچے لیٹنے پر مجبور کردیتے ہیں ، اور لوٹنے کے ساتھ ساتھ جھوٹی اخلاقیات و شرم و حیا کا درس دیتے رہتے ہیں ! جب تک یہ لوٹتے رہتے ہیں دوسرے تماشہ دیکھتے رہتے ہیں ، ان کا دور ختم ہوتا ہے پڑھے لکھے ڈاکووں کا بیورو کریسی ،ٹیکنو کریسی ، حقہ کریسی ، خوشامد کریسی اور نہ جانے کون کون سی کریسی کے ناموں تلے کا دور شروع ہوتا ہے اگلے پانچ سال والوں کو یہ حساب دینا ہوتا ہے کہ خزانے میں لوٹنے کے لیے کتنا مال پڑا ہے یہ مناسب موقع جان کر اپنی لوٹ مار بھی اسی میں شامل کردیتے ہیں !! جانے والے پریشان ہوتے ہیں کہ ہم تو اتنا نہیں لوٹا یہ مال کہاں چلا گیا !! اور آنے والا اس انتظار میں لگ جاتا ہے کہ چلو تھوڑا سا وقت گزر جانے دو پھر ہم لوٹتے ہیں ، نئے آنے والے اپنے پڑھے لکھے بٹھاتے ہیں تاکہ ان کی لوٹ مار کا علم نہ ہوسکے ۔ ان کی لوٹ مار کا تو علم ہوجاتا ہے لیکن یہ پڑھے لکھے ان کے پردے میں جو لوٹ مار کرتے ہیں اس کا علم ان ڈاکووں کو بھی نہیں ہوتا !!!

ڈاکو ہونے سے بہتر ہے بندہ بیوروکریٹ ہوجائے

ویسے یہ لطیفہ “جیونیوز” اپنے علم پھیلانے کی مہم میں بھی شامل کرسکتا ہے ۔ علم کے فائدے کے عنوان سے ۔ کیونکہ جو علم وہ پھیلانا چاہتا ہے اس سے بیورو کریٹ ، ٹیکنو کریٹ ، پیپسی کریٹ ،حقہ کریٹ اور ڈاکو ہی جنم لیتے ہیں !!!


Posted in Urdu | Tagged , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , | 1 Comment

پاکستان میں آن لائن شاپنگ کے اعداد و شمار اور حقائق

Online Shopping Statistics in Pakistan

پاکستان میں مجموعی طور پر انٹرنیٹ کا استعمال بڑھ رہا ہے لیکن کیوں اور کس مقصد کے لئے اسے استعمال کیا جا رہا ہے، یہ مغربی ممالک سی بلکل محتلف ہے. پاکستان میں انٹرنیٹ صارفین کو ان کی آمدنی، تعلیم اور صنف کی بنیاد پر مختلف کیٹگریز میں تقسیم کیا جا سکتا ہے. انٹرنیٹ کو عام طور پر تفریح کے لئے استعمال کیا جاتا ہے جس میں داؤن لوڈنگ،سٹریمنگ اور سماجی رابطوں کی ویب سائٹ کا استعمال شامل ہے. اسے وسیع پیمانے پر مارکیٹنگ اور اشتہارات کے لئے بھی استعمال کیا جاتا ہے. کچھ مواقع پر مستند اور قیمتی معلومات لوگوں تک پہنچا نے کے لئے انٹرنیٹ کو ٹیلی -سیلز اور دوسرے ذرائع پر ترجیح بھی دی جاتی ہے. اوسطا ایک پاکستانی (کم آمدنی سے لے کر گریجویٹس اور پوسٹ گریجویٹس) تقریباً تین گھنٹے یا اس سے زیادہ روزانہ انٹرنیٹ پر صرف کرتے ہیں. وہ ٥٥٠ kbps کے انٹرنیٹ کنکشن کے لئے ماہانہ ٥٠٠ سے ١٠٠٠ روپے بھی ادا کرتے ہیں. یہ خوردہ فروشوں، تھوک فروشوں اور دیگر فروخت کندگان کے لئے بہت فائدہ مند ہے کیوں کہ انٹرنیٹ پر فروخت کندگان کو صارفین کی مکمل توجہ حاصل ہوتی ہے۔


آن لائن کامرس ایک ابھرتا ہوا رجحان ہے جو ابھی بہت کم لوگوں تک محدود ہے. آن لائن شاپنگ کے مظاہر میں کچھ کیٹگریز ایسی ہیں جو آرڈرز حاصل کر رہی ہیں. ملبوسات میں ٹی شرٹس اور الیکٹرانکس میں موبائل فون اور دوسرے چھوٹے گیجٹس سب سے زیادہ بکنے والی اشیا ہیں. گھر کے سامان اور جوتوں کی کیٹگریز بھی کافی آرڈرز حاصل کرتی ہیں. اس رجحان کی محتلف وجوہات ہیں جن میں اشیا کی قیمت، ترسیل کا وقت اور وہ علاقہ جہاں سے آرڈر کیا گیا، شامل ہیں. اگرچہ انٹرنیٹ شہری اور دیہاتی دونوں علاقوں میں استعمال کیا جاتا ہے لکین ای کامرس صرف صوبہ پنجاب اور سندھ کے شہری علاقوں تک محدود ہے. یہ ای کامرس ترسیل کے وقت ادائیگی کی وجہ سے کامیاب ہو رہی ہے۔


کچھ کمپنیز نے پہلے ہی جنوبی اشیا اور خاص طور پر پاکستان میں سرمایاکاری شروع کر دی ہے. یہ کمپنیز ایک سال سے توسیع کے منصوبے کے ساتھ مزید مضبوط ہوتی جا رہی ہیں. ایک جرمن بزنس انکیوبیٹر “راکٹ انٹرنیٹ” پہلے ہی آٹھ مختلف ادیموں جن میں کیمو.پی کے بھی شامل ہے کے  ساتھ مارکیٹ میں داخل ہو چکا ہے. ساؤتھ افریقن کمپنی “Naspers” نے بھی پاکستان میں OLX کے طور پر سرمایاکاری کی ہے. ایک اور نیویای کمپنی جس کا نام “Schibsted” ہے اس نے پاکستان میں آسانی.کوم.پی کے کے طور پر سرمایاکاری کی ہے. یہ ویب سائٹس تیزی سے ترقی کرتے ھوے ١٥٠٠ آرڈرز روزانہ حاصل کر رہی ہیں. یہ شرح نمو G3 اور G4 کے متعارف ہونے کے بعد مزید بڑھنے کی امید کی جا رہی ہے۔

Posted in Urdu | Tagged , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , | Leave a comment

عمران خان جواب دو

پنجاب میں مزدور کی کم از کم اجرت 12 ہزار روپے لیکن خیبرپختونخواه میں 15 ہزار روپے. مگرکیوں؟

خیبرپختونخواه میں غریب آدمی کیلئے ایک من آٹا دوسرے صوبوں کی نسبت 400 روپے سستا، لیکن کیوں؟

صرف خیبرپختونخواه میں ہی بزرگ شہریوں کو قطار سے بچانے کے لئے پنشن کارڈز کی فراہمی، کیوں؟

پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار خیبرپختونخواه میں پولیس کی تنخواہ دوسرے صوبوں کی پولیس کے برابر کیوں؟ جب مولانا فضل الرحمن اور ANP نے پولیس کی تنخواہ دوسرے صوبوں سے کم رکھی ہوئی تھی تو تم نے دوسرے صوبوں کے برابر کیوں کی؟

صرف خیبرپختونخواه میں ہی غریب آدمی کے لئے ایک کلو گھی دوسرے صوبوں کی نسبت 40 روپے سستا کیوں؟
پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار صرف خیبرپختونخواه پولیس کو ہی ہیلی کاپٹر فراہم کیوں کیے گئے؟

صرف خیبرپختونخواه میں ہی پولیس انٹیلی جنس سکولز کا قیام کیوں؟

جب اے این پی اور فضل الرحمن نے خیبرپختونخواه میں میٹرک تک تعلیم اور کتابیں مفت نہیں دیں، تو صرف تمہاری حکومت نے ہی کیوں دیں؟

پاکستان کے تمام صوبوں میں ترقیاتی فنڈز ایم پی اے کو ملتے ہیں تاکہ ایم پی اے عوام کو کانا کرکے اگلے الیکشن میں ووٹ بھی حاصل کرسکیں اور اپنی کمیشن بھی کما سکیں لیکن صرف خیبرپختونخواه میں ہی ترقیاتی فنڈز ایم پی اے کو دینے کی بجاۓ گاؤں کی سطح تک پہنچانے کی ضد کیوں؟

اعلی تعلیم یافتہ نوجوانوں کو ملازمت نہ ملنے کی صورت میں ماہانہ بے روزگاری الاؤنس، صرف خیبرپختونخواه میں ہی کیوں؟

پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار ینگ ڈاکٹرز کو سروس سٹرکچر کی فراہمی، صرف خیبرپختونخواه میں ہی کیوں؟

پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار ٹیکس کولیکشن کے ہدف کا حصول، صرف خیبرپختونخواه میں ہی کیوں؟
پنجاب، سندھ اور بلوچستان میں بجلی کے تمام منصوبوں کا آغاز غیر ملکی سرمایہ کاری کی مدد سے، لیکن صرف خیبرپختونخواه میں ہی بجلی کے منصوبے غیر ملکی امداد کے بغیر کیوں؟

بچے کی پیدائش سے قبل تین بار سرکاری ہسپتال سے مفت چیک اپ کروانے پر ہر عورت کو 2700 روپے کا انعام، صرف خیبرپختونخواه میں ہی کیوں؟

پشاور یونیورسٹی کے خزانچی او نتھیاگلی ہاؤسنگ سکیم کے ڈی جی سمیت ڈیڑھ سال میں کرپشن کرنے پر 100 سے زائد بیوروکریٹس اور دیگر افسران کی گرفتاری، صرف خیبرپختونخواه میں ہی کیوں؟

بچوں کو سکولز کی طرف کھینچنے کے لئے ماہانہ جیب خرچ کی فراہمی، صرف خیبرپختونخواه میں ہی کیوں؟

پنجاب میں ن لیگ کے ضلعی صدر بلو بٹ نے شاہ محمود قریشی کے گھر پر حملہ کیا لیکن پنجاب پولیس نے اسے کچھ نہیں کہا جبکہ خیبرپختونخواه میں تحریک انصاف کے ضلعی صدر ظفر خان نے پولیس کے ساتھ تھوڑی سی بدتمیزی کی تو خیبرپختونخواه پولیس نے اسے پکڑ کر اندر کردیا. کیوں؟

پنجاب میں ایف آئی آر کٹوانے کے لئے لاکھوں افراد جمع کرکے دھرنا دینا پڑتا ہے اور کروڑوں روپے خرچ کرنا پڑتے ہیں، لیکن خیبرپختونخواه میں ہر شخص آن لائن ایف آئی آر کٹوا سکتا ہے کیوں؟

پنجاب میں ن لیگی ایم پی اے رانا شعیب نے پولیس پر تشدد کیا، ن لیگ کے ایم این اے کے بیٹوں نے غریب کی بیٹی کے ساتھ گینگ ریپ کیا، پولیس دونوں کا کچھ نہ بگاڑ سکی. لیکن خیبرپختونخواه میں ڈپٹی سپیکر کے بھائی نے خاتون سے زیادتی کی تو وه ابھی تک جیل سے باہر نہیں آ سکا. کیوں؟ اسکی ضمانت تک نہ ہوسکی. کیوں؟

پنجاب میں رانا مشہود نے کرپشن کی، لیکن اسے کسی نے کچھ نہیں کہا. خیبرپختونخواه میں وزیروں نے کرپشن کی تو انہیں فارغ کر دیا گیا. کیوں؟

باقی صوبوں کے وزراء اعلی روزانہ ہیلی کاپٹر پر گھومتے ہیں، لیکن پرویز خٹک سرکاری ہیلی کاپٹر پر اپنے دوست کے بیٹے کی شادی پر چلا گیا تو اسے معذرت کرنے پر مجبور کر دیا گیا. کیوں؟

خیبرپختونخواه کے دور دراز دیہاتوں میں موبائل ہیلتھ یونٹس کی فراہمی. صرف خیبرپختونخواه میں ہی کیوں؟

تمام صوبوں نے ریلوے کی ہزاروں ایکڑ اراضی پر قبضہ کیا ہوا ہے، لیکن صرف خیبرپختونخواه نے ہی ریلوے کی اراضی ریلوے کو واپس کردی. کیوں؟

سندھ، پنجاب اور وفاقی حکومت کی کارکردگی کے اشتہارات روزانہ ٹی وی اور اخبارات کی زینت بنتے ہیں، صرف خیبرپختونخواه کے اشتہارات نہیں چلتے. کیوں؟

اسکے علاوه 42 ایسے انقلابی کام جو پاکستان کی تاریخ میں پہلے کبھی نہیں ہوۓ، صرف خیبرپختونخواه میں ہی کیوں؟
عمران خان جواب دو…! یہ سب کچھ پنجاب میں کیوں نہیں؟ صرف خیبرپختونخواه میں ہی کیوں؟

 

Posted in Urdu | Tagged , , , , , , , , , , , , , , | Leave a comment

Famous Video Lecture of Maulana Tariq Jameel in Oslo Norway

Famous Video Lecture of Maulana Tariq Jameel (an Islamic Scholar and Preacher) in Oslo, Norwey which he delivered in 2010.

In this Islamic Lecture Maulana Tariq Jameel has discussed various aspects of human body and human soul and differences between them, their individual requirements. Maulana Tariq Jameel has explained how humans of today are running behind worldly luxuries and completely forgotten purpose of their existence, and completely forgotten the mission from their creator “Allah”.

This lecture is in Urdu, however people who can understand Hindi can get benefit from this lecture as well. I suggest my blog visitors and everyone else, please spare some time and listen this lecture to correctly understand purpose of human existence in this world. This will also help you find common mistakes we do in our lives. If we know our mistakes and try to correct them, it will bring piece in our life. This lecture of Molana Tariq Jameel is available at a series of Youtube videos in 16 Parts. For your convince I have added all 16 Videos below.

If you find it useful please make dua for me and my parents. Thank you!

مولانا طارق جمیل کا اردو اسلامی بیان – اوسلو – ناروے

یہ لیکچر یو ٹیوب پر ایک سیریز کی شکل میں موجود ہے جس کے سولہ حصے ہیں، سامعین کی آسانی کے لیے نیچے تمام حصوں کو اکٹھا کر دیا ہے۔ اس مکمل بیان میں مولانا طارق جمیل نے انسانی جسم اور انسانی روح کی ضروریات اور تقاضوں پر بحث کی ہے اور یہ واضح کیا ہے کہ آج کا انسان کس طرح دنیاوی آسائشوں کے پیچھے بھاگ رہا ہے اور اپنے بنائے جانے کے مقصد کو یکسر فراموش کر چکا ہے اور اس مشن کو جو اللہ تعالی نے ہر انسان کے ذمے لگایا ہے، اپنی مصروفیت میں سے کچھ وقت نکال کر اس بیان کو سنیں اور اپنی دینی و دنیاوی زندگی کو بہتر بنانے کا سامان کریں، جزاک اللہ

Maulana Tariq Jameel Lecture in Oslo Norway Part 1

Maulana Tariq Jameel Lecture in Oslo Norway Part 2

Maulana Tariq Jameel Lecture in Oslo Norway Part 3

Maulana Tariq Jameel Lecture in Oslo Norway Part 4

Maulana Tariq Jameel Lecture in Oslo Norway Part 5

Maulana Tariq Jameel Lecture in Oslo Norway Part 6

Maulana Tariq Jameel Lecture in Oslo Norway Part 7

Maulana Tariq Jameel Lecture in Oslo Norway Part 8

Maulana Tariq Jameel Lecture in Oslo Norway Part 9

Maulana Tariq Jameel Lecture in Oslo Norway Part 10

Maulana Tariq Jameel Lecture in Oslo Norway Part 11

Maulana Tariq Jameel Lecture in Oslo Norway Part 12

Maulana Tariq Jameel Lecture in Oslo Norway Part 13

Maulana Tariq Jameel Lecture in Oslo Norway Part 14

Maulana Tariq Jameel Lecture in Oslo Norway Part 15

Maulana Tariq Jameel Lecture in Oslo Norway Part 16

Posted in Islam | Tagged , , , , , , , , , , , , , , | 2 Comments

How to Get Exit Re-Entry Visa for your family in Saudi Arabia

It is Quite helpful for the expatriates / foreigners in Saudi Arabia, who have activated their MOI online services or electronic services. This could be done with much ease as compared to past. You can do it in your home without going to Jawazat or Moi office.
Follow the steps here.

exit-re-entry-visa

Exit Re-Entry Procedure

Posted in Features | Tagged , , , , , , , | Leave a comment

يا رحمة للعالمين – مظفر وارثی کی ایک خوبصورت نعت

يا رحمة للعالمين – مظفر وارثی کی ایک خوبصورت نعت
Ya Rahmatal Lil Aalamin Naat by Muzafar Warsi

Posted in Urdu | Tagged , , , , , , , , , , , , , , | Leave a comment

محمد مبشر نذیر ایک خوفناک حادثے میں شدید زخمی

mubashir-nazir


محمد مبشر نذیر ایک اسلامی مصنف اور آن لائن اسلامک سٹڈیز پروگرام کے سربراہ ہیں۔ ایک طویل عرصے سے وہ لکھنے لکھانے کے ساتھ منسلک ہیں اور کامیابی سے دو عمدہ ویب سائٹس چلا رہے ہیں۔ ان کے ساتھ ملاقات کا تفصیلی احوال میں پہلے بھی اپنے بلاگ پر لکھ چکا ہوں۔

انیس دسمبر 2013 کو وہ اپنی اہلیہ کے ساتھ گھر سے کچھ ہی دور ایک میڈیکل سٹور سے کچھ دوائیاں لانے کے لیے نکلے، اگر چہ یہ ان کی روٹین کا حصہ نہیں تھا وہ باقاعدگی سے الاھلی کلب جدہ میں سکواش کھیلتے تھے تاہم اس شام انہوں نے سوچا کہ تھوڑی سی چہل قدمی بھی ہو جائے گی اور باہر کی ہوا بھی کھا لیں گے۔ وہ اپنی گھر سے چند ہی منٹوں کی مسافت پر سڑک کی ایک طرف اپنی اہلیہ کے ساتھ جا رہے تھے کہ ایک تیز رفتار گاڑی نے انہیں ٹکر مار کر سڑک پر اچھال دیا، اس زور دار ٹکر کے نیتجے میں وہ اچھل کر دور جا گرے جب کہ ان کی اہلیہ دوسری طرف جا گریں۔ گاڑی چلانے والا کوئی عرب جوان تھا جو ڈر کر یا اپنا جرم چھپانے کی خاطر موقع سے بھاگ نکلا۔ یہ سڑک چونکہ ایک ذیلی سڑک تھی چنانچہ یہاں عام راہ گیر یا دیگر گاڑیاں بہت کم تھیں۔

مبشر بھائی کی اہلیہ اس شدید ٹکر کے باوجود ہوش میں تھیں اور انہوں نے بچی کھچی توانائی جمع کر کے اپنے گھریلو ملازم کو فون پر کال کی اور حادثہ کے بارے میں اطلاع دی جو چند ہی منٹوں میں گاڑی بھگاتا جائے حادثہ پر پہنچ گیا

وہاں سے بذریعہ ایمبولینس دونوں زخمی افراد کو ایک قریبی ہسپتال، مستشفی جدعانی میں لایا گیا جو شارع امیر متعب پر واقع ہے۔ حادثہ کا وقت رات آٹھ بجے کا تھا اور ہسپتال پہنچتے پہنچتے تقریبا ساڑھے آٹھ بج گئے۔ مبشر نزیر کے سر میں اور ریڑھ کی ہڈی میں شدید چوٹیں آئی تھیں جب کہ ان کی اہلیہ قدرے محفوظ رہیں جنہیں ایک مختصر سرجری کے بعد تین ماہ کے آرام کی تاکید کرتے ہوے ڈاکٹروں نے وارڈ میں منتقل کر دیا۔ تاہم ان کے لیے اب بھی چلنا پھرنا ممکن نہیں جب تک وہ تین ماہ تک ٹھیک نہیں ہو جاتیں۔

مبشر بھائی سر پر لگنے والے شدید چوٹوں کے باعث ہوش میں نہیں تھے جس پر انہیں آئی سی یو میں منتقل کیا گیا اور ڈاکٹر مسلسل ان کی ذہنی حالت کا جائزہ لیتے رہے ۔ لیکن صبح تک بھی ان کی دماغی حالت بہتر نہیں ہوئی جس پر ڈاکٹر نے کہا کہ ان کے بچنے کے چانس فقط 10 فیصد ہیں تاہم اگر ان کے دماغ کا آپریشن کیا جائے تو چانس 30 فیصد تک ہو سکتے ہیں لیکن ان کو ایک شیدد دماغی جھٹکا لگ چکا ہے اور ہو سکتا ہے ان کی یاداشت نہ کرے یا پھر جسم کا کوئی حصہ کام نہ کرے۔ بہر حال مبشر بھائی کے گھر والوں نے آپریشن کی اجازت دے دی جس کے بعد 20 دسمبر کو دن 2 بجے مبشر بھائی کا آپریشن شروع ہوا جو رات 8 بجے تک جاری رہا۔ جس کے بعد ڈاکٹروں نے پھر انہیں آئی سی یو میں ہی منتقل کیا۔

بعد ازاں ڈاکٹروں سے بات ہونے پر پتا چلا کہ وہ ایک ہفتے تک مبشر بھائی کے ہوش میں آنے کا انتظار کریں گے اور ضرورت پڑی تو پھر آپریشن کریں گے۔ اور ان کے گھر والے اپنے آپ کو کسی بھی ممکنہ صورت حال کے لیے تیار کر لیں۔ کیوں کہ سب کچھ اللہ کے ہاتھ میں ہے۔ اور مبشر بھائی کو دعائوں کی شدید ضرورت ہے۔ ایک معجزہ ہی انہیں عام زندگی کی طرف واپس لا سکتا ہے اور باری تعالی کے لیے کیا ممکن نہیں ہے۔ وہ ہر قسم کے معجزے کی قدرت رکھتا ہے۔

جو عرب جوان اس حادثہ کا ذمہ دار تھا اسے گھر پہنچنے پر اس کے والد نے لے جا کر پولیس کے حوالے کر دیا اور خود ہسپتال میں کافی دیر تک موجود رہا۔ پھر وہ اپنا نام پتہ اور تفاصیل بتا کر واپس چلا گیا۔

یہ سبھی باتیں مجھے کل ہسپتال میں رکنے کے دوران پتہ چلیں، جیسا کے وہاں موجود مبشر بھائی کے کولیگ اور قریبی دوست تبادلہ خیال کر رہے تھے۔ کچھ باتیں میری اہلیہ کو مبشر بھائی کی اہلیہ سے بھی پتہ چلیں، حادثہ کی کچھ تفصیلات میں اختلاف بھی تھا جو کہ مبشر بھائی کی اہلیہ کے بیان کردہ واقعات اور باہر مردوں کی بیٹھک کے بیان کردہ واقعات میں تھا۔ لیکن سبھی باتیں بعد میں کلیئر ہو جائیں گی۔ سب سے اہم بات تو مبشر بھائی کی صحت اور تندرستی ہے۔ تمام قارئین سے التماس ہے کہ ہمارے عزیز دوست اور نیک صفت انسان مبشر نذیر کے لیے دعا کریں کہ اللہ تعالی ان کو جلد صحت عطا کرے آمین

Posted in Urdu | Tagged , , , , | 8 Comments

Request prayers for a Dearest Friend and Great Person

Famous Religious writer Mr. Muhammad Mubashir Nazir is very injured in a road accident. He is in ICU since the accident 19-12-2013. We request all readers to pray for his health and recovery.

Request-for-Prayers-for-Mubashir-Nazir

Posted in News | Tagged , , , | 4 Comments