ویلنٹائن ڈے ہماری عید نہیں


یہ عید منانا کیسا ہے
یہ یوم محبت کس کا ہے
اپنا ہے یا غیروں کا؟
گر اپنا ہے تو ہر مسجد سے
کیوں اس کی صدائیں آتی نہیں؟
کیوں دین کے مصدر و ماخذ کے
سب پنے اس سے خالی ہیں؟

کیوں مائیں اپنے بچوں کو کبھی اس کی گھٹی پلاتی نہیں
کیوں بہنیں اپنے بھائیوں کو ، اس دن کی لوری سناتی نہیں
یہ بات عیاں ہے ظاہر ہے یہ عید ہمارے عید نہیں
جب مان لیا ہم سب نے کہ
نہ یوم محبت اپنا ہے ، نہ عید ہماری عید ہے یہ

پھر اس کا اتنا شور ہے کیوں؟
اس دن کو منانے کی خاطر ، پھر اتنا زیادہ زورہے کیوں
ہم اپنے رب کی بغاوت میں، کیوں ان سے محنت کرتے ہیں
کیوں پیار کے جھوٹے پردے میں ، اقدار کا سودا کرتے ہیں

کچھ ہوش کرو اے اہل وطن ہم کیسے زندہ رہتے ہیں
ہر سمت یہاں پر لاشیں ہیں، ہر آنکھ سے آنسو بہتے ہیں

بس جرم ہمارا غفلت ہے، جو مال و جاہ سے الفت ہے
غیر اللہ کی تقلید یں ہیں اور اپنے رب سے بغاوت ہے

گر چاہتے ہیں ہم کہ دن بدلیں، چہروں پے ہنسی کے پھول کھلیں
تو آو چلو گھر رب کے چلیں
کریں توبہ اپنے گناہوں کی اور درپے اپنے رب کے گریں

نہ یوم محبت اپنا ہے نہ عید ہماری عید ہے یہ
مت کھانا دھوکہ مغرب سے اتنی سی میر ی تاکید ہے یہ

—————————————————–

شاعر : راجہ اکرام


About Yasir Imran

Yasir Imran is a Pakistani living in Saudi Arabia. He writes because he want to express his thoughts. It is not necessary you agree what he says, You may express your thoughts in your comments. Once reviewed and approved your comments will appear in the discussion.
This entry was posted in Poetry, Urdu and tagged , , , , , , , , . Bookmark the permalink.

One Response to ویلنٹائن ڈے ہماری عید نہیں

  1. جزاك الله خيرا

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s