محمد مبشر نذیرسے ایک تعارف اور ملاقات


آج کل سبھی بلاگرز ایک دوسرے سے ملنے ملانے میں‌مصروف ہیں، اسی سلسلے میں میں بھی اپنی ایک صاحب سے ملاقات کا ذکر کرنا چاہوں گا۔ جو اردو بلاگر تو نہیں لیکن انٹرنیٹ پر اردو اور اسلام کو پھیلانے میں بہت اہم کردار ادا کر رہے ہیں۔

محمد مبشر نذیر سعودی عرب میں رہنے والے ایک پاکستانی ہیں اور میرے بہت اچھے دوست ہیں۔ مبشر صاحب انٹرنیٹ پر ایک بہت اچھی اردو ویب سائٹ چلا رہے ہیں جہاں اسلامی مسائل پر بہت اچھا مواد دستیاب ہے جو کہ مبشر صاحب کی ذاتی کاوش اور اپنی تعلیم کی بنیاد پر بیان کیا گیا نقطہ نظر ہے۔ اس کے علاوہ اسی ویب سائٹ پر پرسنیلیٹی ڈیویلپ منٹ، رسک مینجمینٹ اور سیروسیاحت پر مبنی کچھ مواد بھی رکھا گیا ہے۔ مبشر صاحب سے جان پہچان کچھ عرصہ قبل اس وقت ہوئی جب میں نے گوگل پر اسلامی معلومات سے متعلقہ کسی تلاش کے نتیجے میں ان کی ویب سائٹ دریافت کی۔ ان کے کچھ سفر نامے پڑھ کر یہ اندازہ ہوا کہ وہ کراچی سے تعلق رکھتے ہیں اور حالیہ دنوں میں‌سعودی عرب میں ملازمت و رہائش اختیار کیے ہوے ہیں۔

مبشر صاحب کی دی گئی ای میل پر رابطہ کیا تو انہوں نے بہت جلد جواب دے دیا، یوں کچھ گپ شپ چلی ،مبشر صاحب نے بھی میرا بلاگ دیکھا اور اسکی تعریف کی۔ اور ساتھ ہی مجھے ملنے کی دعوت دے ڈالی۔ پھر ماہ رمضان آ گیا اور دفتر کے عجیب وغریب اوقات کی وجہ سے یہ ملاقات موخر ہوگئی۔ رمضان گزرنے کے بعد مجھے کچھ شرمندگی کا احساس بھی ہوا کہ باوجود باقاعدہ دعوت دینے کے میں‌مبشر صاحب سے ملنے نہ جا سکا تو پھر مزید دیر کرنے کی بجائے میں نے فورا مبشر صاحب کو فون کر کے ملنے کا وقت مقرر کرنے کی درخواست کی، یوں یہ ملاقات مبشر صاحب کے گھر میں اگلی آنے والی جمعرات کو طے پائی۔ جمعرات کے دن میں ٹیکسی لے کر مقررہ وقت پر مبشر صاحب کی بتائی ہوئی جگہ پر پہنچ گیا جہاں مبشر صاحب موجود تھے ۔ان کے گھر پہنچنے کے بعد باتیں‌شروع ہوئیں ۔ میں نیچے ان باتوں کا خلاصہ پیش کرنے کی کوشش کرتا ہوں۔

مبشر صاحب پاکستان میں کراچی سے نہیں بلکہ میرے شہر ڈنگہ کے قریب ہی جہلم شہر سے تعلق رکھتے ہیں ۔ تاہم اپنی تعلیم اور ملازمت کے سلسلے میں انہوں نے لمبا عرصہ لاہور اور کراچی میں قیام کیا۔ بیشتر پاکستانی شہر اور کئی ممالک جن میں میں مصر، اردن، سعودی عرب، بھارت اور کویت شامل ہیں کی سیروسیاحت کی اور اپنے سفرنامے بھی تحریر کیے۔ حالیا مبشر صاحب ایک اچھی سعودی فرم میں رسک مینجمینٹ سے متعلقہ ملازمت کرتے ہیں، مبشر صاحب اپنے والدین کے اکلوتے لخت جگر ہیں اور وہ اپنے کنبہ کے ساتھ سعودی عرب میں آباد ہیں، ان کی والدہ صاحبہ ، زوجہ محترمہ اور تین عدد دختران بھی انہی کے ساتھ قیام پذیر ہیں۔

مبشر صاحب ایک عالم ہونے کا دعوی تو نہیں کرتے تاہم دینی تعلیم کا گہرا مطالعہ اور رحجان رکھتے ہیں۔اس کے علاوہ وہ درس نظامی بھی پڑھ چکے ہیں، وہ انٹرنیٹ پر مسلم امہ کی بھلائی کے لیے بہت سرگرم ہیں۔ ایک بہت حیرت انگیز بات یہ کہ مبشر صاحب بغیر کسی اردو بلاگنگ پلیٹ فارم، بغیر کسی تکنیکی تعلیم اور بغیر رہنمائی کے ایک اعلی معیار کی اردو ویب سائٹ چلا رہے ہیں، جس میں‌اردو نسخ ایشیا ٹائپ اور نفیس ویب نسخ فونٹ استعمال ہو رہے ہیں۔ مبشر صاحب ایچ ٹی ایم ایل کی باریکیوں سے بھی واقف نہیں لیکن ان کی ویب سائٹ میں بہت سی ایسی باتوں کا خیال رکھا گیا ہے جو ایک اچھی ویب سائٹ کے لیے ہونا ضروری ہے۔ اسی وجہ سےمبشر صاحب کی ویب سائٹ زیادہ تر انٹرنیٹ صارفین کے لیے دیکھنا اور پڑھنا بہت آسان ہے، نیز ویب سائٹ کا لوڈ ہونے کا وقت کمزور انٹرنیٹ کنکشن پر بھی بہت اچھا ہے۔ تاہم ایک چھوٹی سی کمی دیکھنے میں آئی کہ صارفین تحاریر پر تبصرہ نہیں‌کر ستکے۔

میں نے مبشر صاحب کو جدید دور کی بلاگنگ سے متعلق کچھ باتیں بتائیں اور انہیں ورڈ پریس استعمال کرنے کا مشورہ دیا۔ وہ کچھ کتب انٹرنیٹ پر آن لائن کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں تو میں نے انہیں مشورہ دیا کہ ایک کتاب کے لیے ایک مکمل بلاگ بنائیں اور پھر اسے اپنی ویب سائٹ کی ذیلی ڈومین کے ساتھ منسلک کر دیں۔ ورڈ پریس بلاگ چونکہ سرچ انجن کے ساتھ اچھی مطابقت رکھتے ہیں اس لیے یہ مواد زیادہ سے زیادہ صارفین تک پہنچ سکتا ہے۔

مبشر صاحب آج کل جن اہم پراجیکٹس پر کام کر رہے ہیں ان میں سے ایک عربی سے نابلد مسلمانوں کو عربی زبان سکھانے کے لیے مضامین کا ایک مجموعہ، جو بنیادی تعلیم سے لے کر اعلی درجے کی تعلیم کے لیے موزوں ہو گا۔ ان مضامین کی خاص بات یہ کہ ان میں اس بات کا خیال رکھا جائے گا کہ عربی زبان کے موجودہ بگڑے ہوے تلفظ کی بجائے وہ تلفظ سیکھا جائے جو عربی کا اصل تلفظ ہے اور جوآنحضرت صلی اللہ علیہ والہ وسلم کے دور میں رائج تھا۔ اس سلسلے میں انہوں نے کچھ مثالیں بھی دیں کہ آجکل کے عرب عربی بولتے وقت تو مختلف الفاظ کو بگڑے ہوے تلفظ سے بولتے ہیں لیکن وہی الفاظ قرآن کریم کی تلاوت کے دوران صحیح تلفظ سے ادا کرتے ہیں۔

ایک دوسرا پراجیکٹ، عالم دین بننے کے لیے جو مواد مدرسوں میں‌پڑھایا جاتا ہے وہ تحریری شکل میں انٹرنیٹ پر کہیں موجود نہیں، اس لیے وہ یہ سارا مواد انٹرنیٹ پر مہیا کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔یقینن یہ بہت اچھی کاوشیں ہیں۔ اور ان پراجیکٹس کو وقت دینا اس بندے کے لیے انتہائی مشکل ہے جو دن بھر ملازمت کو وقت دے اور شام کو گھر آ کر اپنے کنبے اور بال بچوں کو بھی وقت دینا ہو۔

دعا ہے کہ مبشر صاحب کا یہ کام خالق کائنات کو پسند آئے اور وہ ان پر مزید کرم نوازی کرے اور تمام محنت قبول فرمائے۔ ہماری باتوں کو دوران کھانے کا وقت ہو گیا اور پھر میں نے مبشر صاحب کے ساتھ کھانا کھایا اور کھانے کے بعد ان سے رخصت چاہی۔
محمد مبشر نذیر صاحب کی ویب سائٹ کا ربط نیچے دیا گیا ہے۔
http://www.mubashirnazir.org


About Yasir Imran

Yasir Imran is a Pakistani living in Saudi Arabia. He writes because he want to express his thoughts. It is not necessary you agree what he says, You may express your thoughts in your comments. Once reviewed and approved your comments will appear in the discussion.
This entry was posted in Features, Urdu and tagged , , , , , , , , , , , , . Bookmark the permalink.

18 Responses to محمد مبشر نذیرسے ایک تعارف اور ملاقات

  1. Pingback: آپکے بلاگ پر تازہ ترین پوسٹ - پاکستان کی آواز - پاکستان کے فورمز

  2. jan kr acha laga or esy abhi jane kitne hi log mojod hain jin ka abhi manzar e aam pr ana baqi hai
    pr wo Urdu ki Kidmat kr rahe hain

  3. میں بھی بلاگنگ سے قبل مبشر نذیر صاحب کی ویب سائٹ کا عاشق رہا ہوں۔ خاص طور پر ان کے سفرنامے بہت معلوماتی رہے ہیں۔ یقین کریں عرصے تک میری بھی خواہش رہی کہ میں مبشر صاحب سے مل سکوں۔
    اگر آپ کی دوبارہ ملاقات ہو تو ان کو میرا سلام ضرور پہنچائیے گا۔ میرے خیال میں اس طرح ذاتی رابطوں سے اردو بلاگنگ کی طرف اچھے لوگوں کو متوجہ کیا جا سکتا ہے۔ آپ کا کیا خیال ہے؟

  4. Yasir Imran says:

    طارق راحیل بھائی
    بالکل ٹھیک فرمارہے ہیں ، بہت سے لوگ ابھی تک گم ہیں انٹرنیٹ میں جنہیں ڈھونڈنے کی ضرورت ہے

    ابو شامل صاحب
    میں انشا اللہ آپ کا سلام پہنچا دوں گا, بقیہ ذاتی ملاقاتیں اسی صورت میں کامیاب ہو سکتی ہیں جب اگلے صاحب بھی کوئی شوق رکھتے ہوں اور ان کا اردو سے بھی کوئی تھوڑا بہت واسطہ ہو۔ ویسے کوشش تو ہمیں ضرور کرنی چاہیے۔ بہت شکریہ رائے دینے کے لیے

  5. سب سے پہلے تو آپ سب بھائیوں کا بہت بہت شکریہ کہ آپ نے مجھ ناچیز کی تحریروں کو اس قابل سمجھا کہ آپ ان پر رائے دے سکیں۔ محترم یاسر عمران بھائی کا شکریہ کہ انہوں نے ایک عام سی ملاقات پر تحریر ہی لکھ دی۔ طارق راحیل بھائی نے اپنے احساسات بیان کیے اور ابو شامل بھائی نے میری تحریروں کو پسند کیا۔ ان سب بھائیوں کی محبت پر میں ان کا شکر گزار ہوں۔ دعاؤں کی درخواست ہے۔ آپ جب چاہیں، مجھ سے mubashir.nazir@gmail.com پر رابطہ کر سکتے ہیں۔

  6. Yasir Imran says:

    مبشربھائی
    میرے بلاگ پر خوش آمدید
    باقی شکریہ کی کیا بات ہے، بس مجھے لگا کہ دیگر بلاگرز کو بھی آپ کا تعارف کروایا جائے تو میں نے لکھ دیا، امید ہے ہم سب کو آپ سے سیکھنے کو بہت کچھ ملے گا۔

  7. One-Tec says:

    Its good constructive article…

    thanks for sharing

    — your comment has been edited by administrator, this link is added onto your name. —

  8. آپ کی بدولت میری ان سے بات ہوئی
    ماشاء اللہ بہت اچھی شخصیت کے مالک ہیں
    اللہ ان کو لمبی زندگی اسلام کی مزید خدمت اور سکون عطا فرمائے

  9. Yasir Imran says:

    آپ تو پاکستان میں ہوتے ہیں نا، پھر آپ کی ای میل پر بات چیت ہوئی ہو گی۔ چلیں اچھا کیا آپ نے بھی اپنی رواداد شئیر کر دی۔ بہت شکریہ

  10. کنعان CONAN says:

    السلام علیکم

    جزاک اللہ خیر

    جو بھی مسلمان دین کی خدمت کر رہے ہیں اس کا اجر اللہ کے پاس ھے، اگر ان کی لکھی ہوئی بات سمجھ نہ آئے تو اس پر انہیں کبھی برا نہیں کہنا چاہئے۔ بلکہ اپنی اصلاح کرنی چائیے۔

    والسلام

  11. Pingback: علوم اسلامیہ سیکھنے کی جانب ایک قدم « یاسر عمران مرزا

  12. Pingback: Islamic Questions Answers Blog | Yasir Imran Mirza

  13. Pingback: New Contributing writer | Yasir Imran Mirza

  14. BaaZauq says:

    السلام علیکم
    مبشر نذیر بھائی سے میری بھی کافی پرانی واقفیت ہے لیکن بدقسمتی سے کبھی ملاقات نہیں ہو پائی۔ مگر بیشمار علمی معاملات میں ہمیشہ ان سے بروقت تعاون ہی ملا ہے۔ اللہ ان کی تمام جائز کاوشوں کو قبول فرمائے اور انہیں جزائے خیر سے نوازے ، آمین۔

    • Yasir Imran says:

      وعلیکم السلام باذوق
      اگر آپ سعودی عرب ہوتے تو شاید ملاقات ہو جاتی، ویسے مبشر بھائی کچھ عرصہ تک پاکستان جانے والے ہیں، شاید آپ وہاں ان سے مل سکتے ہیں۔ تبصرہ کرنے کے لیے شکریہ

  15. Pingback: سعودی عرب میں جیزان، فیفا اور ابہا کا سفر - پاکستان کی آواز - پاکستان کے فورمز

  16. میں ان کا تعارف پیش کرنے کے لیے بہت مشکور ہوں جزاک اللہ

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s