تم آؤ تو ہم بھی عید کریں


تم آؤ تو ہم بھی عید کریں

تم آؤ تو ہم بھی عید کریں

حسرت ہے تمہاری دید کریں
کچھ دیر تو دل کو چین ملے
کچھ روز تو من کا پھول کھلے
اب لوگ بھی کچھ تائید کریں

تم آؤ تو ہم بھی عید کریں


تم سے ایک گزارش ہے
یہ اپنے دل کی خواہش ہے
اک بار ملو، اک بار ملو
ہر بار یہی تاکید کریں

تم آؤ تو ہم بھی عید کریں

جب غم کے بادل چھائے تھے
اس وقت بھی تم نہ آئے تھے
سب دشمن یہ تنقید کریں
تم آؤ تو ہم بھی عید کریں

مانا کہ ہم دیوانے ہیں
سب باتوں سے انجانے ہیں
جب اپنے ہی بیگانے ہیں
کیا غیروں سے امید کریں

تم آؤ تو ہم بھی عید کریں


About Yasir Imran

Yasir Imran is a Pakistani living in Saudi Arabia. He writes because he want to express his thoughts. It is not necessary you agree what he says, You may express your thoughts in your comments. Once reviewed and approved your comments will appear in the discussion.
This entry was posted in Poetry, Urdu and tagged , , , , , , , , , , , , , . Bookmark the permalink.

One Response to تم آؤ تو ہم بھی عید کریں

  1. میری طرف سے بہت بہت عید مبارک قبول کیجئے

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s