اور ہم کہتے ہیں کہ ہم بہت محنت کرتے ہیں


کل یہ تصاویر مجھے ایک ای میل میں موصول ہوئیں، دیکھ کر دل دہل گیا کہ خلق خدا پر حیات کس قدرمشکل ہے ۔ یہ تصویریں جب آرٹ گیلری میں سجی ہوں گی تو دیکھنے والوں نے کہا ہو گا، واہ کیا تصویر ہے، کیا فوٹو گرافی ہے اور فوٹو گرافر نے یقینن انعام بھی وصول کیا ہو گا مگر کیا کسی نے یہ بھی سوچا ہو گا کہ غربت کی جس چکی میں یہ بچے پس رہے ہیں اس سے ان کو نکالنے کا بھی کوئی بندوبست کیا جائے

ان تصویروں کو دیکھیں اور اندازا کریں آپ کی زندگی کس قدر آسان ہے اور اللہ تعالی نے آپ کو کتنی نعمتوں سے نوازا ہے، امید ہے پھر آپ اللہ سے شکایت نہیں کریں گے

Child-Labor

Child-Labor

Child-Labor

Child-Labor

Child-Labor

Child-Labor

Child-Labor

Child-Labor

Child-Labor

Child-Labor

Child-Labor

Child-Labor

Child-Labor

Child-Labor

Child-Labor

Child-Labor

Child-Labor

Child-Labor

Child-Labor

Child-Labor

Child-Labor

Child-Labor

About Yasir Imran

Yasir Imran is a Pakistani living in Saudi Arabia. He writes because he want to express his thoughts. It is not necessary you agree what he says, You may express your thoughts in your comments. Once reviewed and approved your comments will appear in the discussion.
This entry was posted in Pictures, Urdu and tagged , , , , , . Bookmark the permalink.

8 Responses to اور ہم کہتے ہیں کہ ہم بہت محنت کرتے ہیں

  1. yasir shirazi says:

    aaaah ya khuda hum sab ko himat ataa kar k hum apni qoom k bachooo ko acha mustakbil de sakain..

  2. فیصل says:

    واقعی انتہائی افسوس کا مقام ہے۔ مجھے اپنے آپ سے شرم آ رہی ہے۔

  3. جن لوگوں نے ان تصاویر کی نمائش کر کے ڈالر وصول کئے ہیں انہوں نے اس میں سے کتنے ان بچوں کے خاندانوں میں تقسیم کئے ہیں ؟
    يہ بچے اپنے مُفلس خاندان کے لئے ایک آدھ وقت کی سوکھی روٹی کماتے ہیں ۔ زمین پر سوتے ہیں اور گرمی کی تپش برداشت کرتے ہیں ۔ جنہوں نے ان تصاویر کی نمائش کی ہے وہ ایئرکنڈیشنڈ گھروں میں رہتے ہوں گے ۔ اور ایئرکنڈیشنڈ کاروں میں گھومتے ہوں گے اور فائیو سٹار ہوٹلوں میں کھانا کھاتے ہوں گے ۔ وہ اپنی دولت میں سے کچھ ان بچوں پر خرچ کیوں نہیں کرت ؟

  4. Yasir Imran says:

    افتحار انکل
    بس دولت جمع کرنے کی حوس ہے لوگوں کو، خرچ کرنے والے کم کم ہیں، مگر ہیں ضرور ، شاید یہی وجہ ہے کہ ہمارا معاشرہ قائم و دائم ہے

    فیصل صاحب میں آپ سے اتفاق کرتا ہوں

    یاسر شیرازی صاحب اللہ آپ کی دعا قبول فرمائے

  5. میں چھوٹا تھا اس زمانے میں پی ٹی وی پر ایک ڈراما آیا تھا جس میں ایک مصور، ایک ڈاکٹر اور ایک مصنف نے فن پارے، تحقیق اور تحریر پر اعلی اعزازات حاصل کیے تھے۔ ان تینوں کا موضوع ایک فقیر خاتون تھی۔ یعنی مصور نے اس کی تصویر بنائی تھی، ڈاکٹر نے اس کو لاحق بیماری کے علاج میں اہم تحقیق کی اور مصنف نے اس پر تحریر لکھی تھی۔ جب یہ تینوں اپنے “کارنامے” کے اعزاز حاصل کر رہے تھے تو وہی فقیرنی اسی ہال کے باہر بھیک مانگ رہی تھی اور بالآخر وہی مر گئی۔
    اس طرح کی کئی تصاویر روزانہ ہماری نظروں کے سامنے سے گزرتی ہیں۔
    بس ‘بے حسی’ کی خیر ہو ۔۔۔ ۔۔۔۔۔

  6. ye hi to dunya hai bhai
    ye sab chalta aaraha hai
    chalta hi rahe ga

    kisi ko de kr aazmaya ja raha hai
    to kisi ko na de kr

    jis ko dia hai wo dosron ko kia deta hai
    or jis ko nai dia to kia wo cheen leta hai dosron se k is pr hi shakir hai

    sab aazmaish k khel hain

    Allah hum sab k dil mai Reham or Fikar ata kary

  7. ربّا سچیا
    (فیض احمد فیض )

    ربّا سچیا توں تے آکھیا سی
    جا اوئے بندیا جگ دا شاہ اے توں

    ساڈیاں نعمتاں تیریاں دولتاں نیں
    ساڈا نیب تے عالیجاہ اے توں

    ایس لارے تے ٹور کد پچھیا اے
    کی ایس نمانے نال بیتیاں نیں

    کدی سار وی لئ او رب سائیاں
    ترے شاہ نال جگ کی کیتیاں نیں

    کتے دھونس پولیس سرکار دی اے
    کتے دھاندلی مال پٹوار دی اے

    ایویں ھڈاں اچ کلپے جان مری
    جیویں پھاھی اچ کونج کرلاندی اے

    چنگا شاہ بنایا ای رب سائیاں
    پوے کھاندیاں وار نہ آندی اے

    مینوں شاہی نئیں چائیدی او رب سائیاں
    میں تے عزت دی ٹکر منگناں ہاں

    مینوں تانگ نیئں محلاں ماڑیاں دی
    میں تے جیون دی نکڑ منگناں ھاں

    تو میری منے تے تیریاں میں مناں
    تیری سوں جے اک وی گل موڑاں

    جے اے تانگ نئ پجدی تے رب سائیاں
    فیر میں جاواں تے رب کوئ ہور لوڑاں

  8. Rushabh says:

    I want to read you but Urdu is becoming an issue!
    any options?

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s