سپریم کور ٹ آف پاکستان نے شریف برادران کو نااہل قراردید یا


سپریم کور ٹ آف پاکستان نے شریف برادران کو نااہل قراردید یا، فیصلے کے بعد شہباز شریف وزیر اعلی نہیں رہے۔ اپ ڈیٹ

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ تازہ ترین۔25فروری 2009 ء)سپریم کورٹ نے شریف برادران اہلیت کیس میں مسلم لیگ نواز کے قائد میاں نوازشریف اور ان کے بھائی شہبازشریف کو نااہل قراردیدیا ہےاورپنجاب اسمبلی سے شہبازشریف کی رکنیت منسوخ کردی ہے۔فیصلے کے بعد شہبازشریف وزیراعلیٰ پنجاب نہیں رہے ہیں۔آٹھ ماہ سے جاری مقدمے کے فیصلے میں سپریم کورٹ نے شریف برادران اہلیت کیس کی درخواستیں مسترد کردیں


۔سپریم کورٹ نے ہائی کورٹ کے فیصلے کی توثیق کی ہے۔سپریم کورٹ کے تین رکنی بنچ نے شریف برادران اہلیت کیس کی سماعت نمٹاتے ہوئے شریف برادران کو نااہل قراردیا۔سپریم کورٹ میں تین رکنی بنچ نے جسٹس موسیٰ کے لغاری کی سربراہی میں شریف برادران کی انتخابی اہلیت کے حوالے سے مقدمے کی سماعت کے دوران آج پاکستانی اٹارنی جنرل لطیف کھوسہ نے اپنے دلائل میں کہا کہ شریف برادران اہلیت کیس میں چیف سیکرٹری اور اسپیکر پنجاب متاثرہ فریق نہیں ہیں۔اٹارنی جنرل کا کہنا تھا کہ تمام ججز نے آئین کے تحت حلف اٹھارکا ہے ،عبوری آئین کا حلف غیرمتعلقہ بات ہے۔انہوں نے کہا کہ نوازشریف کے تجویز تائید کنندہ اس وقت فریق بن سکتے جب عدالت انہیں اجازت دے۔تجویز اور تائید کنندہ کا فریق ہونا ضروری نہیں۔انہوں نے اپنے دلائل جاری رکھتے ہوئے کہا کہ عدالتی بینچ کی وسعت برداری کا فیصلہ جج کی صوابدید پرہوتاہے اسے کوئی دست بردار ہونے کی ہدایت نہیں کرسکتا۔دلائل مکمل ہونے کے بعد کچھ دیر کا وقفہ دیا اور بعد میں شریف برادران اہلیت کیس نمٹاتے ہوئے تین رکنی بنچ نے نوازشریف کو نااہل قراردیا۔

—————————————————————————–

’پنجاب: سزا یافتہ اعلی عہدے پر‘

شہزاد ملک
بی بی سی اردو ڈاٹ کام، اسلام آباد
پاکستان مسلم لیگ(ن) کے قائد میاں نواز شریف اور وزیر اعلی پنجاب میاں شہباز شریف کی اہلیت کے بارے میں دائر درخواستوں کی سماعت کرنے والے سپریم کورٹ کے تین رکنی بینچ کے سربراہ جسٹس موسی لغاری نے کہا ہے کہ حکومت پنجاب میں ایک ایسے شخص کو اعلی عہدے پر تعینات کیا گیا ہے جسے توہین عدالت کے مقدمے میں سزا ہوچکی ہے۔

منگل کو ان درخواستوں کی سماعت کے دوران جسٹس موسی لغاری نے کہا کہ حکومت پنجاب نے میاں شہباز شریف کی طرف سے مختلف بینکوں سے لیے گئے قرضوں کے بارے میں بھی عدالت کو تحریری طور پر آگاہ نہیں کیا ہے۔

پنجاب کے ایڈووکیٹ جنرل خواجہ حارث نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ شریف برادران نے جتنا قرضہ لیا تھا وہ اُن کی جائیداد کی نیلامی کرکے بینکوں نے واپس لے لیا ہے اس طرح اب شہباز شریف کسی بھی بینک کے نادہندہ نہیں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ میاں شہباز شریف بھکر اور راولپنڈی سے بلامقابلہ منتخب ہوئے تھے جبکہ الیکشن کمیشن نے اس کا نوٹیفکیشن مختلف تاریخوں میں جاری کیا تھا۔

انہوں نے کہا کہ میاں شہباز شریف نے بھکر والی نشست اپنے پاس رکھی اور راولپنڈی کی نشست چھوڑ دی جبکہ خرم شاہ کے وکیل احمد رضا قصوری کا کہنا ہے کہ میاں شہباز شریف نے راولپنڈی کی نشست اُس وقت چھوڑی جب دونوں صوبائی سیٹوں سے اُن کی کامیابی کا نوٹیفیکیشن جاری ہوچکا تھا اس لیے وہ اب دونوں سیٹوں سے نااہل ہوچکے ہیں۔

احمد رضا قصوری نے عدالت میں شریف برادران کے اُن بیانات کے اخباری تراشے پیش کیے جس میں انہوں نے عدلیہ کی توہین کی تھی۔ انہوں نے کہا کہ میاں نواز شریف نے عدلیہ کے بارے میں اپنے حالیہ بیان میں کہا ہے کہ جو جج اُن کی اہلیت کے بارے میں دائر درخواستوں کی سماعت کر رہے ہیں وہ خود اہل نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ قومی یا صوبائی اسمبلی کا سپیکر کسی بھی رکن کے اہلیت اور نااہلیت کے بارے میں عدالتوں سے رجوع نہیں کرسکتا۔ احمد رضا قصوری نے کہا کہ مولوی تمیز الدین اور گوہر ایوب صدر کی طرف سے کی گئی کارروائی کے خلاف عدالت میں پیش ہوئے تھے۔

عدالت نے اٹارنی جنرل سردار لطیف کھوسہ سے کہا کہ وہ بدھ کے روز ان درخواستوں کے متعلق کوئی دلائل دینا چاہتے ہیں تو دے دیں۔

واضح رہے کہ شریف برادران کی اہلیت کے بارے میں لاہور ہائی کورٹ کے فیصلے کے خلاف وفاق نے سپریم کورٹ میں درخواست دائر کی تھی جس میں کہا گیا تھا کہ الیکشن میں حصہ لینا میاں نواز شریف کا جمہوری اور بنیادی حق ہے۔

بعدازاں حکمران جماعت پاکستان پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ( ن) کے درمیان اختلافات کی وجہ سے وفاق نے ان درخواستوں کے متعلق یہ موقف اختیار کیا کہ وہ اس لیے عدالت میں پیش ہو رہے ہیں کیونکہ ان درخواستوں میں اُنہیں فریق بنایا گیا ہے اورعدالت ان درخواستوں پر جو بھی فیصلہ کرے گی وہ وفاق کو منظور ہوگا۔



About Yasir Imran

Yasir Imran is a Pakistani living in Saudi Arabia. He writes because he want to express his thoughts. It is not necessary you agree what he says, You may express your thoughts in your comments. Once reviewed and approved your comments will appear in the discussion.
This entry was posted in News, Urdu and tagged , , , , , , , . Bookmark the permalink.

2 Responses to سپریم کور ٹ آف پاکستان نے شریف برادران کو نااہل قراردید یا

  1. Billu says:

    Yeh to hona hi tha un ko dharney ki saza to milni hi thi.
    waisey ab to Sahreef Brothers Dharney main Bharpur tareekey se shirkat ker saktay hain

  2. Shahbaz Dar says:

    zardari nay kam karwa kar apnay hi paon per kulhari mari hai aur ab un ki government kuch dino ki mehman hai.
    Shahbaz Sharif aur Nawaz Sharif ko na-ehal karar denay walay khud na-ehal hai.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s